بریکنگ نیوز

مذہب

فکر وخیالات

مدیر کی قلم سے

Poll

Should the visiting hours be shifted from the existing 10:00 am - 11:00 am to 3:00 pm - 4:00 pm on all working days?

SUBSCRIBE LATEST NEWS VIA EMAIL

Enter your email address to subscribe and receive notifications of latest News by email.

نوجوانوں مقصد سے منحرف نہ ہوں ، امپار ان کے ساتھ کھڑا ہے

سدرشن چینل کے خلاف امپار کا سخت ردعمل ، نفرت کے خلاف کارروائی کا منصوبہ تیار کرنے کیلئے جلد پروگرام انعقاد کرنے کا فیصلہ

وطن سماچار ڈیسک

نوجوانوں مقصد سے منحرف نہ ہوں ، امپار ان کے ساتھ کھڑا ہے

سدرشن چینل کے خلاف امپار کا سخت ردعمل ، نفرت کے خلاف کارروائی کا منصوبہ تیار کرنے کیلئے جلد پروگرام انعقاد کرنے کا فیصلہ

 

نئی دہلی: جامعہ کے جہادی اور یو پی ایس سی جہاد کا مسلمانوں پر الزام لگانے والے سدرشن نیوز چینل کے ذریعہ جاری ہونے والے ٹیزر پر سخت ردعمل دیتے ہوئے انڈین مسلمس فار پروگریس اینڈ ریفارمس نے کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے ایسی سوچ کو ہندوستانی آئین کی روح کے منافی قراردیا ہے ۔واضح رہے کہ آئی پی ایس ایسوسی ایشن سمیت متعدد تنظیموں نے بھی اس کی مذمت کی ہے اور جامعہ ملیہ اسلامیہ نے اس چینل کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے۔

 

 

امپارکی جانب سے جاری کردہ ایک میڈیا بیان میں کہا گیا ہے کہ سدرشن نیوز چینل کی جانب سے جاری ٹیزر جس میں مسلمانوں کو نشانہ بناتے ہوئے یو پی ایس سی جہاد اور جامعہ کے جہادی جیسے الفاظ استعمال کیے تھےیہ صحافت کے ماتھے پر یہ ایک بدنما داغ ہے۔ امپار اس کی مذمت کرتاہے ،یہ غیر ذمہ دارانہ صحافت کی علامت ہے ۔ امپار نے کہاہے کہ اس کے خلاف پہلے بھی بہت سی شکایات کی جا چکی ہیں ، لیکن امپار بھی ایسے لوگوں کے خلاف کارروائی کرنے کی کوشش کر رہا ہے اور اس کے لئے تمام قانونی طریقوں پر غور کیا جارہا ہے ۔

 

 

امپار کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ہم سب پہلے ہندوستانی ہیں اور ہمیں اپنے مذہب سے پہچانا نہیں جاسکتا ، کیونکہ جب ہم دنیا کے کسی بھی ملک میں جاتے ہیں تو ہماری شناخت ہندوستانی کی حیثیت سے ہوتی ہے۔ سدرشن چینل نے جو کچھ کہا اور کیاہے وہ آزادی اظہار رائے کے زمرے میں نہیں آتا ، بلکہ یہ براہ راست نفرت پھیلانے کی کوشش ہے۔ اس کے ساتھ ہی ، امپار نے کہا ہے کہ وہ اس سلسلے میں ایک ویبنار کا بھی اہتمام کرے گا تاکہ نفرت انگیز تقاریر کو روکنے کے لئے حکمت عملی بنائی جاسکے اور اس کے حل پر عمل کیا جاسکے۔

 

 

امپار نے مسلم نوجوانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ ایسی تقریروں سے ہمت نہ ہاریں ، اور نہ ہی کسی کے بارے میں گالی گلوچ کریں۔ ہم سمجھ سکتے ہیں کہ یہ ایک مشکل وقت ہے ، لیکن اس مشکل وقت میں ، نفرت انگیز تقریر آپ کو آپ کے مقصد سے ہٹانہ دیں اس کی پوری کوشش کرنی ہے اور آپ کو اس کا پورا خیال رکھنا ہوگا۔ امپار نے مسلم نوجوانوں سے اپیل کی ہے کہ وہ سخت محنت اور مشقت سے باز نہ آئیں اور اپنے مسابقہ جاتی امتحانات پر پوری توجہ مرکوز کریں۔ امپار نوجوانوں کے ساتھ کھڑا ہے اور ان سے اپیل کرتا ہے کہ وہ اپنی دنیا آپ پیدا کرنے کےفلسفے پر کام کریں ۔

 

You May Also Like

Notify me when new comments are added.