بہار الیکشن پر مولانا عاطف سنابلی کا آیا بیان

بی.جے.پی کو معلوم ہے کہ مسلمان کسی بھی حال میں بی.جے.پی کو ووٹ کرنے والا نہیں ہے، چونکہ مسلمان فی الوقت قومی سطح پر بی.جے.پی سے بجات پانے کے لئے ان پارٹیوں کو سپورٹ کرسکتا ہے جو بی.جے.پی ہٹاؤ مشن میں کامیابی سے ہمکنار ہوسکیں اور معاون ومددگار ثابت ہوسکیں...

وطن سماچار ڈیسک

بہار الیکشن پر مولانا عاطف سنابلی کا آیا بیان

بی.جے.پی کو معلوم ہے کہ مسلمان کسی بھی حال میں بی.جے.پی کو ووٹ کرنے والا نہیں ہے، چونکہ مسلمان فی الوقت قومی اور مرکزی سطح پر بی.جے.پی سے نجات پانے کے لئے ان پارٹیوں کو سپورٹ کرسکتا ہے جو بی.جے.پی ہٹاؤ مشن میں کامیابی سے ہمکنار ہوسکیں اور معاون ومددگار ثابت ہوسکیں...

 

 

 

اس لئے مسلمان ووٹ بی.جے پی کو ملے نہ ملے لیکن جو بہار میں جیت اور ہار اور فتح وشکست طے کرنے میں بنیادی رول اور اہم کردار اداکرتا ہے، اس( مسلمان طبقہ + متشدد امبیڈکروادی دلت) کا ووٹ بی.جے.پی اور این ڈے کو ہرانے والوں کو نہ جائے ...

 

 

 

اس کے لئے منصوبہ بند طریقے سے کشواہا، مایاوتی، پپو یادو اور اویسی کو لگایا گیا ہے ...

علاوہ ازیں کچھ اصحاب دستار اور ضمیر فروش ملت کے سوداگر اور قوم کے نام نہاد دانشوران اور سیاسی قائدین بھی لگائے گئے ہیں، باقاعدہ دہلی سے پیکج دیکرانہیں بھیجا گیا ہے کہ وہ مسلمانوں میں بھرم پھیلائیں اور انہیں گمراہ کریں کہ کانگریس اور لالو مسلمانوں کے کتنے بڑے دشمن ہیں ...تیجسوی ہندووادی ہیں ..وغیرہ وغیرہ...

چونکہ بہاراور دہلی کارشتہ اسی طرح سیاست اور بہار کا رشتہ کافی گہرا ہے ...

 

 

 

اور کل اگر نتیجہ بے ایمانی پر مشتمل آتا بھی ہے تو انہیں کو مہرہ بنایا جائے گا کہ دونوں فرنٹ کشواہا اور پپو یادو کے گٹھبندھن نے کھیل بگاڑا ...

عوام بآسانی مودی میڈیا کے کہنے پر قبول کرلے گی...

ویسے زمین پر تیجسوی جنگ جیت چکے ہیں...

اب انہیں میڈیا اور مشین میں جیتنا ہے ...

وہ کیا ہوگا پتہ نہیں...جب تک نتیجہ نہ آجائے ....

 

 

 

سوچئے کتنے ضمیر فروش ہیں کہ ایک طرف ملت اور قوم کے وجود اور قوم کی شہریت وقومیت جیسا سنگین اور حساس  مسئلہ ہے وہیں دوسری طرف کچھ دلال مسلمانوں پر عرصہ حیات تنگ کرنے والوں کی حمایت کا جھنڈا اٹھا کر گھوم رہے ہیں ..

 

 

 

ایم. ایل سی اور چھوٹے چھوٹے عہدوں اور مناصب پر...

اگر ان کو وزیر اعلیٰ کا عہدہ مل جائے تو ایمان وعقیدہ سب بیچ ڈالیں گے...

قوت فکروعمل پہلے فنا ہوتی ہے...

قوم کے ہمدردوں اور دردمندوں کو کئی محاذ پر لڑنا ہے...

گھیرابندی بہت شاطرانہ اور مضبوط ہے ....

 

You May Also Like

Notify me when new comments are added.