توبہ ولایت کی سیڑھی کا پہلا پائدان ہے:سیدقمر الاسلام

مخدوم الملت سرکار سید ولی الدین احمد قادری قدس سرہ کا چوبیسواں عرس سادگی اور احتیاط کے ساتھ اختتام پذیر

وطن سماچار ڈیسک

توبہ ولایت کی سیڑھی کا پہلا پائدان ہے:سیدقمر الاسلام

 مخدوم الملت سرکار سید ولی الدین احمد قادری قدس سرہ کا چوبیسواں عرس سادگی اور احتیاط کے ساتھ اختتام پذیر

 

فتح پور: آج کا انسان غیر مطلوب موازنے اور شکست خوردہ نفسیات میں جینے کو مجبور ہے,وہ مسلسل داخلی ہزیمت,بےسکونی اور باطنی کرب سے جوجھ رہا ہے۔ وہ پشت پر گناہوں کے انبار سے بوجھل کیے ہوئے قلبی اطمینان تلاش کر رہا ہے,جب کہ قرآن کے مطابق اعتراف گناہ, ندامت,ایمان کامل اور اللہ کی رضا کے لیے کیے جانے والے اعمال ابدی خوشیوں کے ضامن ہیں۔ان خیالات کا اظہار مولانا سید قمرالاسلام صاحب نے کیا- مخدوم سید ولی الدین احمد قادری کے سالانہ عرس کے موقع پر خطاب کے دوران انھوں نے توبہ کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ہم اتنے سست اور کمزور ہوگئے ہیں کہ ہزاروں رکعت نوافل پڑھ پانا تو کجا ,ہمارے لیے پنج وقتہ نمازوں کی پابندی مشکل ہورہی ہے,ہم نیک اعمال انجام نہیں دےسکتے تو کم سے کم اللہ سے اپنے گناہوں پر چند قطرےآنسو بہالینے کی توفیق مانگ لیں,کیوں کہ اپنی غلطیوں کا اعتراف کر لینے والے اور رونے گڑگڑانے والے بندے بارگاہِ رب کے محبوب بن جاتے ہیں.عمل صالح کی وضاحت کرتے ہوئے انھوں نے فرمایا کہ جب ایک بدکار عورت نجس جانور کی پیاس بجھاکر اللہ کے غضب سے نجات پاسکتی ہے,تو پھر اشرف المخلوقات کی خدمت کرنے کا کتنا بڑا صلہ ہوگا اس کا اندازہ نہیں لگایاجاسکتا- جلسے سے قاری محمد اسلم خان عارفی,مولانا احمد صفی,حافظ سید فخرالاسلام اور سید چاندکاظمی نے بھی خطاب کیا اور سرکار ولی الملت کی حیات وخدمات پر روشنی ڈالی,جب کہ نظامت کے فرائض مولانا محمد رضوان خان نے انجام دیے.

کورونا وائرس کی وجہ سے اس سال عرس کی تمام تقریبات نہایت سادگی اور اختصارکے ساتھ انجام دی گئیں,صلاۃ وسلام اور حضور صاحب سجادہ سید شاہ غلام غوث میاں قادری کی رقت انگیز دعاؤں پر محفل عرس کااختتام ہوا-زائرین کے لیے لنگر کا وسیع انتظام تھا.

 

You May Also Like

Notify me when new comments are added.