مذہب

فکر وخیالات

مدیر کی قلم سے

Poll

Should the visiting hours be shifted from the existing 10:00 am - 11:00 am to 3:00 pm - 4:00 pm on all working days?

SUBSCRIBE LATEST NEWS VIA EMAIL

Enter your email address to subscribe and receive notifications of latest News by email.

مالونی بلڈنگ سانحہ: بے گھر ہوئے 50؍افراد کے کھانے کا بند و بست اور۹؍ سالہ فیضان کے کفالت کرے گی جمعیۃ علماء

خیا ل رہے کہ منہدم شدہ مکان میں۳؍ فیملی رہائش پذیر تھیں ۔اس حادثہ میںخواتین اور بچوں سمیت ۱۱؍ افراد شہید اور ۷؍ زخمی ہوئے تھے،مولانا حلیم اللہ قاسمی نے متاثرین سے ملاقات کی اورمیونسپل عملہ کی طرف سےخالی کرائے گئے متصلہ عمارت کے مکینوںجوحادثہ میں متاثر50؍ افراد کو محفوظ مقام پر پہونچا دیا کہ تین روز کے طعام کی ذمہ داری لیتے ہوئے مقامی ذمہ داروں کو تیس ہزار روپئے حوالے کر دیئے، اور ان کے مکان میں واپسی پر اگر ضرورت محسوس ہوئی تو ان کے لئے راشن بھی فراہم کیا جائے گانیز مقامی ذمہ داروں کو ہدایت دی کہ زخمیوں کو علاج و معالجہ کے لیئے درکار جن دوائیوں کی ضرورت ہو اس کا آپ میڈیکل اسٹورسے انتظام کیجئے ،جمعیۃ علماء مہاراشٹر اس کی ادائیگی کرے گی ۔ اسی طرح ۹؍ سالہ فیضان جس کے سرپرستوں میں کوئی نہیں بچا ، اس کے تعلیم و کفالت کی ذمہ داری جمعیۃ علماء مہاراشٹرنےلی ہے۔

وطن سماچار ڈیسک

مالونی بلڈنگ سانحہ: بے گھر ہوئے 50؍افراد کے کھانے کا بند و بست اور۹؍ سالہ فیضان کے کفالت کرے گی جمعیۃ علماء

                ممبئی 10؍ جون :آج جمعرات سہ پہر 3؍بجے مولانا حلیم اللہ قاسمی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء مہاراشٹر (ارشد مدنی ) کی قیادت میںمولانا محمد اسلم قاسمی ،مفتی افضل حسین قاسمی،حافظ محمد عرفان ،ڈاکٹر اسرار احمد،مولانا ظہیر الدین قاسمی،مولانا نذیر الاسلام قاسمی،مولانا وسیم قاسمی،محمد انس،حافظ سعید،حافظ کلام نابینا،اقبال بھائی ،نورالدین بھائی وغیرہ پر مشتمل ایک وفد نے گزشتہ شب ۱۱؍ بجے ممبئی میںہونے والی شدید طوفانی بارش کے سبب کلکٹر کمپائونڈمالونی ملاڈ ویسٹ میں حادثہ کا شکار ہونے والی تین منزلہ عمارت کا دورہ کیا۔

 

                خیا ل رہے کہ منہدم شدہ مکان میں۳؍ فیملی رہائش پذیر تھیں ۔اس حادثہ میںخواتین اور بچوں سمیت ۱۱؍ افراد شہید اور ۷؍ زخمی ہوئے تھے،مولانا حلیم اللہ قاسمی نے متاثرین سے ملاقات کی اورمیونسپل عملہ کی طرف سےخالی کرائے گئے متصلہ عمارت کے مکینوںجوحادثہ میں متاثر50؍ افراد کو محفوظ مقام پر پہونچا دیا کہ تین روز کے طعام کی ذمہ داری لیتے ہوئے مقامی ذمہ داروں کو تیس ہزار روپئے حوالے کر دیئے، اور ان کے مکان میں واپسی پر اگر ضرورت محسوس ہوئی تو ان کے لئے راشن بھی فراہم کیا جائے گانیز مقامی ذمہ داروں کو ہدایت دی کہ زخمیوں کو علاج و معالجہ کے لیئے درکار جن دوائیوں کی ضرورت ہو اس کا آپ میڈیکل اسٹورسے انتظام کیجئے ،جمعیۃ علماء مہاراشٹر اس کی ادائیگی کرے گی ۔ اسی طرح ۹؍ سالہ فیضان جس کے سرپرستوں میں کوئی نہیں بچا ، اس کے تعلیم و کفالت کی ذمہ داری جمعیۃ علماء مہاراشٹرنےلی ہے۔

 

 

واضح رہے کہ ممبئی کے مضافات میں واقع ملاڈ ویسٹ میں واقع کچی بستی میں شدید بارش کی وجہ سے حادثہ پیش آیا جس میں تادم تحریری گیارہ افراد کے جاںبحق ہونے کی اطلاع ہے جبکہ زخمیوں کی تعداد سات بتائی جارہی ہے جس میں ایک نو سالہ بچہ یتیم ہوگیا ہے جس کی کفالت کی ذمہ داری جمعیۃ نے اٹھائی ہے۔

You May Also Like

Notify me when new comments are added.